اہم خبریں پاکستان

مسکان شیخ کےقتل کےبعدباقی ٹک ٹاکرز کوبھی دھمکیاں ملنا شروع ہوگئیں۔حکومت پاکستان کابڑافیصلہ

Pakistani tiktok star muskan shaikh
Written by admin

لاہور (ایشیانیوزپوائنٹ ،اخبار تازہ ترین) افسوس ناک خبر، ٹک ٹاک اسٹار مسکان شیخ کوقتل کردیاگیا۔قتل کس نےکروایالیکن اس سےپہلےآپ جان لیں کے مسکان شیخ کےقتل کے بعد صندل خٹک اور حریم شاہ کوبھی قتل کی دھمکیاں ملناشروع ہوگٸیں ۔ آخرایساکون کررہاہےپولیس نےفوری کارواٸی کرنےکااعلان کردیا۔میڈیا رپورٹس کے مطابق مسکان شیخ کے قتل کے بعد معروف ٹک ٹاکر حریم شاہ اور صندل خٹک بھی خود کو غیر محفوظ محسوس کرنے لگی ہیں، ان کا کہنا ہے کہ انہیں جان سے مارنے کی دھمکیاں دی جا رہی ہیں۔
اوردھمکیاں دینےوالاہربارمختلف نمبرزسےکال کرتے ہیں۔حریم شاہ کا کہنا تھا کہ افسوس کی بات ہے ہم پاکستان میں غیر محفوظ ہیں انہی حرکات کی وجہ سے پاکستان کا امیج خراب ہو رہا ہے اگر ہم اپنے ہی وطن میں محفوظ نہیں تو پھر ہم کہاں جائیں۔ مسکان شیخ کے قتل نے تمام ٹک ٹاکرز کو خوف میں مبتلا کر دیاہے ،ہربڑاٹک ٹاکرپریشان ہےکہ کہیں اسےبھی نہ ماردیاجاٸے اس حوالے سے معروف ٹک ٹاک اسٹار صندل خٹک کا کہنا ہے کہ ہر بندہ حسد رکھتا ہے اور ایک دوسرے کو نقصان پہنچانے کی کوشش کرتا ہے۔
اس کے علاوہ ٹک ٹاکر عائشہ نے کہا ہے کہ اُسے بھی دھمکی آمیز کالز آرہی ہیں، بہت ڈر لگ رہا ہے۔ واضح رہے کہ گزشتہ شب کراچی کے علاقے گارڈن میں ایک انتہائی افسوسناک واقعہ پیش آیا ہے جہاں نامعلوم افراد کی فائرنگ سے ٹک ٹاکر مسکان شیخ سمیت 4 افراد جاں بحق اور دو زخمی ہو گئے ہیں۔بتایا گیا کہ کراچی کے علاقے گارڈن انکل سریا اسپتال کے قریب نامعلوم افراد نے کارپر فائرنگ کر کے 4 افراد کو نشانہ بنایا۔
فائرنگ کے نتیجے میں زخمی ہونے والوں کو فوری طور پر اسپتال منتقل کیا گیا۔جہاں دورانِ علاج مزید دو زخمی دم توڑ گئے۔جن کی شناخت ریحان شاہ اور عامر خان کے ناموں سے کی گئی، جو مسکان شیخ کے ساتھ ٹک ٹاک پر ویڈیو بناتے تھے۔تمام ٹک ٹاکرکی جانب سےکہاجارہاہےکہ آخرکون ایساظالم ہےاوراسےایسا کرکےکیامل رہاہےہم حکومت پاکستان سےاپیل کرتے ہیں کہ فورکارواٸی کرکےان درندوں کوسزادی جاٸے۔بعدازاں ایس ایس پی سٹی سرفراز نواز نے فائرنگ کے واقعے متعلق مفصل بیان جاری کرتے ہوئے بتایا کہ کار پر فائرنگ کا واقعہ صبح پونے پانچ بچے پیش آیا۔
واردات میں ایک موٹرسائیکل اور رکشے کا استعمال کیا گیا،سرفراز نواز کے مطابق ملزمان نے کار کا پیچھا کرنے کے بعد اس پر فائرنگ کی۔ ملزمان کی فائرنگ سے کار میں سوار خاتون موقع پر ہی جاں بحق ہوئیں جن کی شناخت مسکان کے نام سے کی گئی،بعدازاں گاڑی میں موجود تین افراد نے گاڑی بھگائی تو ملزمان نے ایک بار پھر ان پر فائرنگ کی جس کے نتیجے میں تینوں افراد شدید زخمی ہوئے۔
فائرنگ کی سی سی ٹی وی فوٹیج بھی سامنے آئی ہے جس میں موٹرسائیکل اور رکشے کو کار کا تعاقب کرتے دیکھا جا سکتا ہے جب کہ فائرنگ کے وقت اسپتال کا عملہ بھی بھاگتے ہوئے دکھائی دے رہا ہے۔پولیس نے عینی شاہدین کا بیان بھی ریکارڈ کر لیا ہے۔عینی شاہدین کا کہنا ہے کہ وہ ملزمان کو نہیں دیکھ سکے۔حملہ آور فائرنگ کر کے فوری فرار ہو گئے تھے۔عینی شاہد کے مطابق ایک زخمی شخص جان بچانے کے لیے اسپتال میں بھی داخل ہوا اور اسی دوران اسپتال میں فائرنگ شروع ہو گئی۔میں فائرنگ کے ڈر سے بھاگا، فائرنگ تھمنے کے بعد واپس تو دیکھا کہ لاش پڑی ہے۔اس تمام واقعے کودیکھنےکےبعدایسالگتاہےکہ جیسےکوٸی ذاتی دشمنی نکال رہاہو۔لیکن سی سی ٹی وی کیمروں کی مددسےجلد ملزمان کاپتہ لگالیاجاۓ گا۔
راٸٹرمحمدجمشید

About the author

admin

Leave a Comment